صفحہ اول آئی پی ایس - نيشنل اکیڈمک کونسل English
نيشنل اکیڈمک کونسل

انسٹی ٹیوٹ آف پالیسی اسٹڈیز کو رہنمائی فراہم کرنے والا فورم نیشنل اکیڈمک کونسل ہے۔ اس کونسل کی ذمہ داری ہے کہ وہ نظر رکھے کہ IPS اپنے وژن کی روشنی میں عمومی طور پر اپنا کردار ادا کر رہا ہے۔ اس مقصد کے لیے یہ کونسل سالانہ ریسرچ پروگرام کی منظوری دیتی ہے اور اس پر عمل درآمد کا جائزہ لیتی ہے۔ اس کونسل میں پچیس تا تیس نمایاں اسکالرز اور ماہرین شامل ہیں جو متنوع سماجی، سیاسی اور مذہبی نمائندگی کو یقینی بناتے ہیں۔ کونسل کا سال میں کم ازکم ایک اجلاس ہونا ضروری ہے جس میں جاری پالیسیوں اور پراجیکٹس کا جائزہ اور مستقبل کا علمی منصوبہ زیربحث آتا ہے۔ موجودہ نیشنل اکیڈمک کونسل جنوری ۲۰۱۴ءمیں تشکیل دی گئی جو ۲۰۱۶ءتک کام کرے گی۔

پروفیسرخورشیداحمد

پروفیسرخورشیداحمد ایک معروف اسکالر، ماہر معاشیات اور دینی وعلمی حلقے کے متحرک رہنما ہیں۔ وہ انسٹی ٹیوٹ آف پالیسی اسٹڈیز اسلام آباد کے بانی چیئرمین ہیں۔ وہ اردو اور انگریزی میں ۷۰ سے زائد کتب تحریر/تدوین/ ترجمہ کر چکے ہیں۔ ان کی بہت سی کتابوں کا ترجمہ . ...... مزید
پروفیسر خورشید احمد

عدنان سرور خان

ڈاکٹر عدنان سرورخان پشاور یونیورسٹی میں شعبہ بین الاقوامی تعلقات کے چیئرمین ہیں۔ پاکستان کی خارجہ پالیسی، علاقائی اور بین الاقوامی سیاست اور علاقائی سلامتی کے مسائل آپ کی خصوصی دلچسپی کے موضوعات ہیں۔ وہ اپنے لیکچرز اور تحقیقی مقالات کے ذریعے .......مزید

ڈاکٹر عدنان سرور

اکرم ذکی

جناب اکرم ذکی سینیٹ میں خارجہ امور کمیٹی کے چیئرمین رہے ہیں۔ وہ ایک نفیس اور قابل سفارت کار کی حیثیت سے پہچانے جاتے ہیں۔ پاکستان کے سفیر کی حیثیت سے انہوں نے چین، امریکہ، نائیریمیا اور فلپائن میں خدمات انجام دیں اور پاکستان کی سول سروس میں......مزید

اکرم ذکی

امان اللہ خان

جناب امان اللہ خان جہاں دیدہ بزنس مین اور بزنس کے معاملات میں ماہر تجزیہ کار ہیں۔ وہ راولپنڈی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے چیئرمین رہے ہیں، نیز معروف تجارتی گروپوں اور کمپنیوں میں اہم مناصب پر خدمات انجام دیتے رہے ہیں .......مزید

امان اللہ خان

انیس احمد

پروفیسر ڈاکٹر انیس احمد انسٹی ٹیوٹ آف پالیسی اسٹڈیز کے وائس چیئرمین ہیں۔ وہ بین الاقوامی شہرت کے حامل سماجی سائنس دان ہیں۔ انہوں نے ٹمپل یونیورسٹی پنسلوانیا، امریکہ سے پی ایچ ڈی کیا۔ انہوں نے قومی اور بین الاقوامی سطح پر علمی قیادت کے کئی مناصب پر کام کیا۔ آج کل وہ رفاہ انٹرنیشنل یونیورسٹی اسلام آباد کے وائس چانسلر کی حیثیت سے اپنی ذمہ داریاں ادا کررہے ہیں۔......مزید

ڈاکٹر انیس احمد

خالد اقبال

ایئر کموڈور(ر) خالد اقبال پاکستان کی ایئر فورس میں اسسٹنٹ چیف آف اسٹاف کی حیثیت سے کام کرتے رہے ہیں۔ ایئر فورس میں ملازمت کے دورانیہ میں انہوں نے دو اسکواڈرن کو کمانڈ کیا .......مزید



فصیح الدین

جناب فصیح الدین منصوبہ بندی کمیشن پاکستان کے چیف اکانومسٹ رہے ہیں۔ وہ وزیرخزانہ کے مشیر اور وزارت خزانہ کے اکنامک ایڈوائزر کے مناصب پر بھی کام کرتے رہے ہیں۔ وہ بہت سی کتابوں، تحقیقی مطالعات اور مضامین کے مصنف ہیں۔ علاوہ ازیں اپنی فنی مہارت .......مزید
فصیح الدین

حسن صہیب مراد

ڈاکٹر حسن صہیب مراد یونیورسٹی آف مینیجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی (UMT) لاہور کے ریکٹراور ایسوسی ایشن آف مینیجمنٹ ڈویلپمنٹ انسٹ ٹیوشنز پاکستان کے چئیر مین ہیں۔ وہ معروف ماہر تعلیم ہیں .......مزید

حسن صہیب مراد

عفت ڈار

محترمہ ڈاکٹر عفت ڈار معروف ماہر نفسیات اور ماہر تعلیم ہیں۔ آپ فیڈرل پبلک سروس کمیشن میں چیف سائیکالوجسٹ کی حیثیت سے ذمہ داریاں ادا کرتی رہی ہیں۔ آپ نے تعلیم کی نفسیاتی اساسیات میں کولمبیا یونیورسٹی نیویارک سے ماسٹر کیا اور مینی سوٹایونیورسٹی امریکہ سے .......مزید

عفت ڈار

مرزا حامد حسن

جناب مرزا حامد حسن اپنی قابلیت کی بناء پر بیوروکریسی میں ایک نمایاں شخصیت رہے ہیں۔ وہ فیڈرل سیکرٹری کی حیثیت سے وزارتِ پانی و بجلی، شماریات ڈویژن اور وزارتِ خزانہ میں خدمات انجام دے چکے ہیں۔ ....... مزید



ایم-ریاض الحق

جناب ایم-ریاض الحق سول سروس سے وابستہ رہے ہیں۔ وہ پاکستان کے سرکاری اور بین الاقوامی مالیاتی اداروں میں ۴۵ سال سے زائد عرصہ کام کرنے کا گراں قدر تجربہ رکھتے ہیں۔ ....... مزید



رستم شاہ مہمند

جناب رستم شاہ مہمند افغانستان اور وسطی ایشیا کے امور کے ماہر اور معروف دفاعی تجزیہ کار ہیں۔ آپ نے افغانستان میں پاکستان کے سفیر کی حیثیت سے خدمات انجام دیں نیز آپ تقریبا دس سال تک پاکستان میں افغان مہاجرین .....مزید

رستم شاہ مہمند

سعدیہ عباسی

محترمہ سعدیہ عباسی بیرسٹر ہیں اور پاکستان سینیٹ کی رکن ہیں۔ قانون کی تعلیم کے لیے دنیابھر میں مشہور امریکی اور برطانوی اداروں سے قانون اور سیاسیات کی تعلیم حاصل کرنے کے بعد آپ ہمہ پہلو سیاسی، معاشی اور سماجی اصلاح کی سرگرمیوں .......مزید

سعدیہ عباسی

شمشاد احمد خان

جناب شمشاد احمد خان پاکستان کے سفیر اور سیکرٹری وزارتِ خارجہ رہ چکے ہیں۔آپ کو سفارت کاری کے مخصوص میدانوں میں کام کا خصوصی تجربہ حاصل ہے، جن میں دوطرفہ اور کثیرالجہت سفارت کاری، علاقائی تعاون، تنازعات کا حل، سدباب کی سفارت کاری اور عوامی امور شامل ہیں۔ ...مزید
شمشاد احمد خان

زاہد الراشدی

جناب مولانا زاہدالراشدی معروف اسکالر اور گوجرانوالہ (پنجاب) کے ایک بڑے دینی مدرسہ کے پرنسپل ہیں۔ انسانی حقوق کے فروغ اور سماجی رویوں کی اصلاح کے موضوعات پر اپنے مؤثر کالموں، لیکچرز اور باہمی مذاکرات کے باعث آپ علمی دنیا میں ایک جانی پہچانی .....مزید

زاھد الراشدی

قبلہ ایاز

ڈاکٹر قبلہ ایاز جامعہ پشاور میں اسلامک اینڈ اورینٹل اسٹڈیز فیکلٹی کے ڈین ہیں۔ اس سے قبل بھی وہ کئی اہم علمی مناصب پر ذمہ داریاں ادا کر چکے ہیں، جن میں شامل ہیں: قائم مقام وائس چانسلر جامعہ پشاور؛ ڈین فیکلٹی، اسلامک اسٹڈیز اور عربی  ..... مزید

قبلہ ایاز

احسان الحق

جنرل (ریٹائرڈ) احسان الحق جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی (JCSC) پاکستان کے سابق چیئرمین ہیں۔ ۲۰۰۷ء میں آرمی سے ریٹائر ہونے کے بعد سے جنرل احسان الحق مختلف کاروباری، علمی اور رفاہی سرگرمیوں میں شریک رہے ..... مزید

احسان الحق

احمر بلال صوفی

جناب احمر بلال صوفی ایک سینئر قانون دان اور پاکستان کے سابق وفاقی وزیر قانون ہیں۔ انہوں نے گورنمنٹ کالج لاہور سے گریجویشن اور کیمبرج یونیورسٹی برطانیہ سے 1988ء میں ایل ایل ایم کیا۔.......مزید

ahmerbilal

منیب الرحمن

مفتی منیب الرحمن رویت ہلال کمیٹی پاکستان کے چیئرمین ہیں اور ملک کے چوٹی کے مذہبی اسکالرز میں ان کا شمار ہوتا ہے۔ انہوں نے کراچی یونیورسٹی سے اسلامک اسٹڈیز میں ماسٹرز کیا اور اسلامی علوم اور فقہ کی تعلیم دارالعلوم امجدیہ سے حاصل کی.......مزید

muftimuneeb

سعید احمد قریشی

جناب سعید احمد قریشی پلاننگ کمیشن پاکستان کے وائس چیئرمین کی حیثیت سے 1994ء میں ریٹائر ہوئے۔ اس سے قبل بھی وہ حکومتِ پاکستان کے کلیدی عہدوں پر کام کر چکے ہیں جن میں سیکرٹری جنرل فنانس اور ریونیو، فیڈرل سیکرٹری برائے فنانس ڈویژن.......مزید

saeemahmed

سارہ صفدر

پروفیسر ڈاکٹر سارہ صفدر خیبرپختونخوا میں پبلک سروس کمیشن آف پاکستان کی رکن ہیں۔ اس سے قبل وہ کئی کلیدی علمی مناصب پر کام کر چکی ہیں جن میں پروفیسر اور ڈین، فیکلٹی آف مینجمنٹ اینڈ سوشل سائنسز، اقراء نیشنل یونیورسٹی، پشاور ..... مزید
sarah safdar

جاوید اقبال

پروفیسر ڈاکٹر جاوید اقبال آج کل بلوچستان یونیورسٹی، کوئٹہ کے وائس چانسلر ہیں۔ اس سے پہلے وہ ہمدرد یونیورسٹی کراچی میں فارمیسی فیکلٹی کے ڈین بھی رہ چکے ہیں۔ وہ لیکچرار، اسسٹنٹ پروفیسر، ایسوسی ایٹ پروفیسر اور پروفیسر کے طور پر فارمیسی، کلینیکل فارمیسی، فارماکالوجی اور مائیکروبیالوجی ..... مزید
javaid iqbal

ظہور احمد سواتی

ڈاکٹر ظہور احمد سواتی زرعی یونیورسٹی پشاور کے وائس چانسلر ہیں۔ اس سے قبل وہ اس یونیورسٹی میں تین دہائیوں تک ڈین، ڈائریکٹر، پروفیسر، ایسوسی ایٹ پروفیسر، اسسٹنٹ پروفیسر اور لیکچرار کے طور پر خدمات دیتے رہے۔ 94-1993ء میں وہ اٹلی کی یونیورسٹی آف توشیا، ویٹربو کے شعبہ ایگروبیالوجی ..... مزید
zahoor sawati

خالدرحمٰن

خالد رحمٰن آئی پی ایس کے بانیوں میں سے ہیں اور ۱۹۸۲ء سے ڈائریکٹر جنرل کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہے ہیں۔ معاشیات میں ایم اے ہیں۔ تحقیق، تربیت اور انتظام میں ان کے وسیع تجربے نے آئی پی ایس کو ایک فعال تھنک ٹینک کی حیثیت دینے میں اہم کردار ادا کیا ہے ..... مزید
kr 1

سابق اراکین



مولانا زاہدالراشدی چھاپیے ای میل
مولانا زاھد الراشدیجناب مولانا زاہدالراشدی معروف اسکالر اور گوجرانوالہ (پنجاب) کے ایک بڑے دینی مدرسہ کے  پرنسپل ہیں۔ انسانی حقوق کے فروغ اور سماجی رویوں کی اصلاح کے موضوعات پر اپنے مؤثر کالموں، لیکچرز اور باہمی مذاکرات کے باعث آپ علمی دنیا میں ایک جانی پہچانی اور ہردلعزیز شخت   ہیں۔ آپ ماہنامہ ‘‘الشریعہ’’ کے مدیر اور الشریعہ اکیڈمی کے ڈائریکٹر جنرل ہیں۔ یہ ادارہ پیش آمدہ قومی و بین الاقوامی سماجی امور و معاملات پر اسلامی تناظر میں تحقیق و تجزیہ کا کام کرتا ہے۔ آپ نے ملک میں اور بیرون  ملک ہونے والے بہت سے سیمیناروں، گول میز مذاکروں اور کانفرنسوں میں شرکت کی ہے۔
 
طارق فاطمی چھاپیے ای میل
طارق فاطمیجناب طارق فاطمی بین الاقوامی تعلقات اور دفاعی حکمت عملی کے امور کے ماہر اور معروف تجزیہ کار ہیں۔ وہ سابق سفیر ہیں اور بیرو نِ ملک مختلف پاکستانی مشنز میں سفارت کاری کی مختلف اہم ذمہ داریاں ادا کرتے رہے ہیں۔ آپ امریکہ، اردن، بلجیم، یورپین یونین، لکسمبرگ اور زمباوے میں پاکستان کے سفیر رہ چکے ہیں۔ وہ وزیراعظم کے دفتر میں دفاع، دفاعی پیداوار، ایٹمی توانائی پروگرام اور امور خارجہ کے معاملات کے انچارج بھی رہے ہیں۔ ۱۹۸۲ء سے ۱۹۸۶ء تک وہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاسوں میں پاکستان کے مندوب کی حیثیت سے شریک رہے نیز غیروابستہ تحریک اور اسلامی کانفرنس تنظیم کے متعدد اجلاسوں میں بھی شرکت کی۔  آج کل آپ پاکستان فارن سروس اکیڈمی کی تدریسی فیکلٹی کے ممبر ہیں نیز نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی اور ایڈمنسٹریٹو اسٹاف کالج اور دیگر اداروں میں لیکچرز دیتے ہیں۔ اپنے مضامین کے ذریعے نیز ریڈیو اور ٹی وی پر مذاکروں کے ذریعے قومی سلامتی کے امور پر اپنے خیالات پیش کرتے رہتے ہیں۔
 
شمشاد احمد خان چھاپیے ای میل
شمشاد احمد خانجناب شمشاد احمد خان پاکستان کے سفیر اور سیکرٹری وزارتِ خارجہ رہ چکے ہیں۔آپ کو سفارت کاری کے مخصوص میدانوں میں کام کا خصوصی تجربہ حاصل ہے، جن میں دوطرفہ اور کثیرالجہت سفارت کاری، علاقائی تعاون، تنازعات کا حل، سدباب کی سفارت کاری اور عوامی امور شامل ہیں۔ آپ نے سفارت کاری کے کئی اہم کام تہران، ڈاکار، پیرس، واشنگٹن اور نیویارک کے پاکستان مشنز میں رہ کر ادا  کیے۔  آپ جنوبی کوریا اور ایران میں پاکستان کے سفیر رہے۔ معاشی تعاون کی علاقائی تنظیم ای سی او کے سیکرٹری جنرل اور اقوام متحدہ میں پاکستان کے سفیر اور مستقل نمائندے کی حیثیت سے بھی ذمہ داریاں ادا کیں۔ آپ نے معاشی اور سماجی امور میں اقوام متحدہ کے لیے سینئر مشیر کے طور پر بھی کام کیا۔
 
ڈاکٹرصفدرمحمود چھاپیے ای میل
safdarڈاکٹر صفدرمحمود معروف مصنف، تاریخ دان اور سیاسی تجزیہ نگار ہیں ۔ تاریخ کےشعبہ میں قابلِ قدر علمی کاوشوں کے باعث متعدد ایوارڈز اور انعامات کے ساتھ ساتھ سرکاری سطح پر آپ کو حسنِ کارکردگی کا اعلیٰ اعزاز بھی عطا کیا گیا۔ آپ کی ایک درجن سے زیادہ کتب پر پاکستانی اور غیر ملکی پریس میں مثبت تبصرے ہوئے ہیں اور بڑی تعداد میں غیرملکی اور پاکستانی مصنفین اور محققین نے اپنی کتب میں ان کے حوالے دیے ہیں۔ آپ کی کچھ کتابوں کے تراجم جرمن، چینی، بنگالی، ازبک اور سندھی زبانوں میں بھی ہوئے ہیں۔ آپ کے تحقیقی مقالات بین الاقوامی معیار کے رسائل وجرائد میں شائع ہوتے ہیں۔ آپ نے اعلیٰ درجہ کے سرکاری ملازم کی حیثیت سے اہم انتظامی مناصب پر بھی خدمات انجام دیں۔
 
ڈاکٹر سعیدہ اسداﷲ چھاپیے ای میل
سعیدہ اسد اللہمحترمہ ڈاکٹر سعیدہ اسداللہ فاطمہ جناح یونیورسٹی برائے خواتین راولپنڈی کی وائس چانسلر اور انگریزی ادب کی ماہر ہیں۔ انہوں نے انگریزی میں کلاسیکی اور جدید ادبیات کا تنقیدی تجزیہ کیا ہے اور کئی کتابیں اور تحقیقی مقالات تصنیف کیے ہیں۔ نصابیات اور تدریسی طریقوں میں بہتری کے لیے کی گئی آپ کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے آپ کو قومی اوربین الاقوامی سطح کی معروف تعلیمی اور ادبی انجمنوں کی رکنیت عطا کی گئی ہے۔ خواتین کے مسائل اجاگرکرنے اور عملی کوششوں کے ذریعے ان کا حل تلاش کرنے میں آپ کا کردارقابلِ ذکر ہے۔
 
«شروعپیچھے123456789آگےآخر»

صفحہ: 5